دی اکانومسٹ نے بھارتی چہرے سے جمہوریت کا مصنوعی نقاب نوچ دیا

نئی دہلی (اپووا نیوز) بین الاقوامی جریدے دی اکانومسٹ نے بھارتی چہرہ سے جمہوریت کا مصنوعی نقاب نوچ ڈالا رپورٹ میں لکھا ہے کہ مودی ہندوستان کو ایک جماعتی ریاست بنانے پر تلا ہواہے دی اکانومسٹ میگزین نے اپنی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ مودی سرکار ہندوستان کو غیر جمہوری بنانے پر تلی ہے وزرا ءکی اداروں کے اختیارات میں مداخلت عام ہے جس کی تازہ مثال متنازع صحافی ارناب گوسوامی کی ضمانت کا معاملہ ہے بھارتی فوج کو بھی سیاست میں گھسیٹا گیا سی ڈی ایس کے عہدے پر جنرل بپن راوت کی تعیناتی سیاسی امور میں مداخلت کا ثبوت ہے الیکشن سے پہلے بھی مودی نے فوج کا سہارا لیا لداخ میں چین کے ساتھ تنازع کا بھرپور پراپیگنڈا کیا الیکشن کمیشن کی غیر جانبداری کو متنازعہ بنا کر فرض شناس افسران اور ا±ن کے خاندان کو نشانہ بنایا گیامیگزین کا کہنا ہے کہ بھارتی عدالتیں مودی کی کٹھ پتلی بن چکی ہیں ہزاروں مقدمات زیر التوا اور بے گناہ لوگ کئی سالوں سے انصاف کے منتظر ہیں گزشتہ سال اگست میں مودی نے کشمیر پر غاصبانہ حکمرانی مسلط کی اس دوران ہزاروں بے گناہ کشمیریوں کو حراست میں لیا گیا لیکن عدلیہ خاموش رہی یو پی پی اے میں ترمیم سے مسلمانوں کو دہشت گردی کے الزام میں بھی نشانہ بنایا جا رہا ہے جبکہ آزادی اظہار پر بھی غاصبانہ قانون بنائے گئے

1,344 total views, 6 views today

9 Responses to دی اکانومسٹ نے بھارتی چہرے سے جمہوریت کا مصنوعی نقاب نوچ دیا

  1. ameen raza says:

    good report

  2. Why is it I always really feel like you do?

  3. Melva says:

    Excellent post. Keep posting such kind of info on your page.
    Im really impressed by your site.
    Hey there, You’ve done an excellent job. I will certainly digg it and in my view suggest to my
    friends. I am confident they will be benefited from this web site.

  4. Anderson says:

    Hi my friend! I wish to say that this post is amazing, great written and include approximately all vital infos.

    I’d like to look more posts like this .

  5. Dorie says:

    Excellent blog here! Also your website loads up fast!
    What web host are you using? Can I get your affiliate link to your
    host? I wish my web site loaded up as fast as yours lol

  6. Fanny says:

    I’m not sure where you are getting your info, but good topic.
    I needs to spend some time learning much more or understanding more.
    Thanks for fantastic info I was looking for this information for my
    mission.

  7. Kathy says:

    Hola! I’ve been reading your site for a long
    time now and finally got the bravery to go ahead and give you a shout out from
    Austin Tx! Just wanted to say keep up the excellent job!

  8. Pearlene says:

    Very nice post. I just stumbled upon your weblog
    and wished to say that I’ve truly enjoyed surfing around your blog
    posts. In any case I’ll be subscribing to your rss feed and I hope you write again soon!

  9. Shasta says:

    Excellent beat ! I wish to apprentice while you amend your website, how could i subscribe for a weblog web site?
    The account aided me a appropriate deal. I had been a little bit acquainted
    of this your broadcast provided brilliant transparent idea

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *