5 اگست مقبوضہ کشمیر کی پ±ر ملال و اندوہناک تاریخ کے سیاہ، تاجراتحاد کونسل ڈسکہ

ڈسکہ(اپووا نیوز)چیئرمین تاجراتحاد کونسل ڈسکہ حاجی محمدارشد مغل، جنرل سیکرٹری عرفان افضال اور پریس سیکرٹری امین رضا مغل نے کہے ہے کہ 5 اگست 2019مقبوضہ کشمیر کی پ±ر ملال و اندوہناک تاریخ کے سیاہ ترین دنوں میں سے ایک ہے اسکی وجہ محض یہی نہیں ہے کہ گزشتہ سال 5 اگست کو ہندتوا پرست فسطائی سیاسی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت نے بھارتی آئین سے آرٹیکلز 370 اور 35 (A) کوخارج کر کے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کردی تھی اورمقبوضہ ریاست کو غیر قانونی طور پر بھارت میں ضم کر لیا تھابلکہ اِس کا بنیادی سبب یہ ہے کہ اِس دن کشمیر کی مذہبی، تاریخی، ریاستی، آئینی، آبا دیاتی، سیاسی، ثقافتی،تمدّنی اور تہذیبی حیثیت کو ختم کرنے کے ہندتوا منصوبے پر صحیح معنوں میں عمل درآمد کی ابتدا ہوئی تھی لاک ڈاﺅن کے ابتدائی ایاّم میں ہی 4000 سے زائد افراد کو غیر قانونی طور پرحراست میں لیا گیا اور حسبِ معمول ا±ن پر مظالم کے پہاڑ توڑے گئے اگرچہ 5 اگست 2019 کے بعد بھارتی استبداد نے ایک منطّم پالیسی کا ر±وپ دھارا تاہم باشندگانِ کشمیر کو ہمیشہ سے ہی بد ترین ریاستی بربریت و تشدّد کا نشانہ بنایا جا تارہا ہے تاکہ انھیںایک مستقل اجتماعی خوف میں مبتلا رکھا جا سکے۔یہی وجہ ہے کہ 1989 سے 2020 تک 70 ہزارکشمیری مرتبہ شہادت پر فائز ہوئے نہتّے عوام پر بہیمانہ تشدّد بھی بھارتی پالیسی کا ایک ا ہم رکن رہا ہے۔پچھلے کئی عشروں میں بھارتی عسکری و نیم عسکری اداروں بشمول پولیس نے مقبوضہ کشمیر میں متعدد ٹارچر کیمپ قائم کئے انہوں نے کہا کہ انشاءاللہ وہ وقت دور نہیں جب مظلوم کشمیریوں کو بھارتی تسلط سے آزادی نصیب ہوگی اور وہ آزاد فضاءمیں سانس لیں گے

282 total views, 3 views today

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *