6 ستمبر یوم دفاع, یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر دی ایجوکیٹرز بارہ دری کیمپس گجرات میں ایک پر جوش تقریب

گجرات(ملکہ مبین خالد)6 ستمبر یوم دفاع, یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر دی ایجوکیٹرز بارہ دری کیمپس گجرات میں ایک پر جوش تقریب منعقد کی گئی. اس تقریب کا آغاز نہایت ہی خوبصورت انداز میں کیا گیا. کلام الہی اور نعت رسول مقبول ﷺ سے تقریب کی مودبانہ ابتدا کی گئی. پاک فوج کا خوبصورت لباس زیب تن کیے ہوئے چھوٹے چھوٹے معصوم فوجی بچے اس تقریب کو مزید پر جوش اور دلکش بنا رہے تھے . طلبا کی پر سوز آواز میں پڑھا گیا ملی نغمہ اے راہ حق کے شہیدو ہر آنکھ اشک بار کر رہا تھا لیکن اس کے ساتھ ساتھ یہ نغمہ مزید قوت بخش رہا تھا اور یہ پیغام دے رہا تھا کہ اپنے وطن کی خاطر اس ملک کا اک اک بچہ, جوان اپنی جان و خدمت پیش کرنے سے پیچھے نہیں ہٹے گا.
لگانے آگ جو آئے تھے آشیانے کو
وہ شعلے اپنے لہو سے بجھا دیے تم نے
نویں جماعت کے ایک بچے نے اک ایسی پر جوش تقریر پیش کی جس میں کافروں کے لئے واضح پیغام تھا کہ وہ آزما لے اپنا ہر حربہ ہر کوشش لیکن ہم بھی اپنا حق اپنی جنت اپنا کشمیر لے کر رہیں گیں .ہر بار دشمنوں کو پاک فوج سے شکست کھانی پڑی ہے. اب کی بار بھی اگر کوئی ایسا معاملہ کوئی جنگ ہوئی تو انشاءاللہ پاک فوج ہی سر خرو رہے گی. آندھی آئے یا طوفان ہم لے کر رہے گے اپنا کشمیر. جس پاک فوج کے ساتھ اللہ عزوجل کی طرف سے غیبی مدد آئے اس کو پھر کیا کوئی ہرائے گا. سکول کے معزز ڈائریکٹر شہزادہ شہزاد شفیق صاحب اور اکیڈمک انچارج محسنین نقوی صاحب نے اپنے الفاظ سے لہو کو جوش بخشا اور بچوں کے جذبات کی ترجمانی کی. شہدا ء کربلا اور پاک فوج کے جوانوں کو خراج تحسین پیش کیا گیا. سکول میں موجود 3 ریٹائر پاک فوج کے سپاہیوں نے کچھ واقعات بچوں کے سامنے پیش کیے اور انہیں بتایا کہ کس طرح پاک فوج اپنی جان کی پرواہ کئے بغیر اپنے ملک و وطن کی خاطر ہر وقت کوشاں رہتے ہیں.اس ملک کے جوان تو جوان اس ملک کا اک اک بچہ بھی اپنے وطن کی خدمت کے لیے کندھے سے کندھا ملا کر کھڑا ہے. دی ایجوکیٹرز بارہ دری سکول کے بچوں نے اپنے قلم سے کچھ قیمتی الفاظ لکھے جس میں دشمنوں کو کھلم کھلا للکارا گیا.
دشمن کی نگاہوں کو اٹھنے سے پہلے ہی جھکا دیں گیں
کمزور جو ہم کو سمجے اس کو راہ دیکھا دیں گے.

26,581 total views, 127 views today

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *